Thread Rating:
  • 0 Vote(s) - 0 Average
  • 1
  • 2
  • 3
  • 4
  • 5
منہ بھولا رشتہ
#1
منہ بھولا رشتہ اور اسلام

اسلام میں منہ بولے رشتوں کا کوئی تصور نہیں۔ یہ صرف شیطان کا دھوکا ہے۔ منہ بولا رشتہ بھی آپ کے لیے ویسے ہی نامحرم ہے جس طرح دوسرے لوگ ہیں۔ مخاطب کرتے وقت کسی کو بھائی، بہن یا بیٹی کہنے میں کوئی حرج نہیں لیکن ان منہ بولے رشتوں کو حقیقی رشتوں کی طرح سمجھنا، اسی طرح کا برتاؤ کرنا اور ملنا ملانا کسی بھی طرح مناسب نہیں ہے۔ کچھ لوگ کہیں گے کہ فلاں فلاں فلاں نے ان منہ بولے رشتوں کا بہت پاس رکھا اور حقیقی رشتوں سے بڑھ کر رشتہ نبھایا تو عرض ہے کہ اگر کسی کو شراب پینے سے نشہ نہیں ہوتا تو اس کے لیے شراب حلال نہیں ہوجایا کرتی وہ حرام ہے اور حرام رہے گی۔ اسی طرح اگر کسی نے منہ بولے رشتے کو بہت اچھے طریقے سے نبھایا ہے تو اس کی وجہ سے یہ جائز نہیں ہو جائے گا۔ آپ دوسروں کو بھائی، بہن، باپ، ماں یا بیٹی والی عزت ضرور دیجیئے لیکن بھائی کہنے یا سمجھنے کی وجہ سے سگے بھائیوں جیسی بے تکلفی سے پیش نہ آئیں۔ ہمارے سب سے بڑے خیرخواہ اللہ رب العزت اور نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم ہیں تو جس چیز سے انہوں نے ہمیں منع کردیا وہ کبھی بھی ہمارے لیے فائدہ مند نہیں ہوسکتی چاہے ہم کتنی ہی تاویلیں کیوں نہ کرلیں۔ یہ صرف اپنے آپ کو یا دوسروں کو دھوکہ دینے والی بات ہے اور کچھ نہیں۔
Reply
#2
so true
Reply


Forum Jump:


Users browsing this thread: 1 Guest(s)